متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینرندیم نصرت اورتمام اراکین رابطہ کمیٹی کی پروفیسر ڈاکٹرحسن ظفر عارف کوان کی رہائی پر مبارکباد

متحدہ قومی موومنٹ ( پاکستان ) کے کنوینرندیم نصرت اورتمام اراکین رابطہ کمیٹی نے رابطہ کمیٹی کے رکن پروفیسر ڈاکٹرحسن ظفر عارف کوان کی سات ماہ بعد رہائی پر مبارکباد پیش کی ہے ۔ اپنے ایک مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ پروفیسر ڈاکٹرحسن ظفر عارف نے آزمائش کے وقت میں جس طرح ثابت قدمی کا مظاہر ہ کیاوہ ایک مثال ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ایک ایسے وقت میں جب کہ تحریک کے کئی پرانے اورسینئرارکان نے آزمائش کاوقت آنے پر اپنی جانیں بچانے کیلئے اسٹیبلشمنٹ کے ہاتھوں اپنا سودا کرتے ہوئے قائد تحریک الطاف حسین سے لاتعلقی اختیارکرلی ، آزمائش کے ایسے وقت میں پروفیسرحسن ظفر جن کی تحریکی عمرکچھ ہی دن تھی انہوں نے قائد تحریک الطاف حسین کے ساتھ کھل کراپنی وابستگی کااعلان کیا، انہیں گرفتارکیا گیا اورسرکاری حراست میں ذہنی وجسمانی اذیتیں دی گئیں، انہوں نے اپنی ضعیف العمراورعلالت کے باوجود قید و بند کی تمام ترصعوبتیں برداشت کیں لیکن اپنے ظرف وضمیرکا سود انہیں کیا ، پروفیسر حسن ظفرعارف کی یہ وفاشعاری اورثابت قدمی تحریک کے تمام کارکنوں کے لئے ایک مثال ہے،قائد تحریک الطاف حسین اورتحریک کے تمام کارکنوں اور باوفا مہاجرعوام کوپروفیسرحسن ظفرعارف پر فخرہے۔ ندیم نصرت اوررابطہ کمیٹی نے مزید کہا کہ پروفیسرحسن ظفرعارف کی وفاشعاری ان تمام لوگوں کے لئے ایک سبق ہے جوآزمائش کے وقت میں اپنے آپ کوبچانے کے لئے قائد تحریک الطاف حسین سے برسوں کی وابستگی کوخیرباد کہہ گئے ۔ انہوں نے کہاکہ ایک بارپھرپروفیسرحسن ظفرعارف کوان کی رہائی پرمبارکباد پیش کی اوران کی صحت یابی اوردرازی عمر کے لئے دعاکی ۔