مہاجروں اورتمام مظلوموں کے حقوق کی جدوجہد تمام تر ریاستی مظالم کے باجود جاری رہے گی ۔ الطاف حسین

متحدہ قومی موومنٹ ( پاکستان ) کے بانی و قائد جناب الطاف حسین نے کہا ہے کہ مہاجروں اور تمام مظلوموں کے حقوق کی جدوجہد تمام ترریاستی مظالم کے باجود جاری رہے گی۔ ایم کیوایم کے 33ویں یوم تاسیس کے موقع پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ قیام پاکستان کے بعد سے ہی مہاجروں کو زندگی کے مختلف شعبوں میں ناانصافیوں کا نشانہ بنایا گیا،کوٹہ سسٹم کے نام پر ان کے لئے سرکاری ملازمتوں اور اعلیٰ تعلیم کے دروازے بند کئے گئے ، انہیں نفرت وتعصب کا نشانہ بنایا گیا،ان ناانصافیوں کے خلاف میں نے اورمیرے چند ساتھیوں نے مہاجروں کے حقوق کے لئے 11جون 1978ء کو’’ آل پاکستان مہاجراسٹوڈینٹس آرگنائزیشن ‘‘ کے نام سے جدوجہد کا آغاز کیا اور پھر 18مارچ 1984ء کوعوامی سطح پر ایم کیوایم کا قیام عمل میں لایا گیا۔انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم کا قیام مہاجروں کے احساس محرومی اوران کے ساتھ کی جانے والی ناانصافیوں اورحق تلفیوں کا نتیجہ تھا۔ جب مہاجروں نے ایم کیوایم کے پلیٹ فارم سے جدوجہد کا آغاز کیا تو انہیں ریاستی ظلم وستم کا نشانہ بنایا گیا، ان کا باربارقتل عام کیا گیا، ایم کیوایم کوکچلنے کے لئے ریاستی ظلم وبربریت کا یہ سلسلہ آج بھی جاری ہے ۔جناب الطاف حسین نے کہا کہ ایم کیوایم کی جدوجہد میں ہزاروں کارکنوں اورہمدر دمہاجروں کا لہوشامل ہے اورہمارا آج بھی یہ عزم ہے کہ چاہے کیسے ہی مظالم کیوں نہ ڈھائے جائیں،ہم اپنے شہیدوں کی قربانیوں کورائیگاں جانے نہیں دیں گے ،ہم اپنے حقوق کی اس جدوجہد سے دستبردارنہیں ہوں گے اورمحروم ومظلوم مہاجروں اوردیگر مظلوموں کے حقوق کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔