پروفیسرحسن ظفرعارف کو جیل سے رہائی پر قائد تحریک الطاف حسین کی مبارکباد

تحدہ قومی موومنٹ (پاکستان) کے قائد جناب الطاف حسین نے اسیری کے دوران ہمت وجرات ، بہادری اور ثابت قدمی کے مظاہرے پر پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفرعارف کو دل کی گہرائیوں سے خراج تحسین اور جیل سے رہائی پر انہیں دلی مبارکباد پیش کی ہے ۔ پروفیسرحسن ظفرعارف سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے جناب الطاف حسین نے کہاکہ پروفیسرحسن ظفرعارف اوررابطہ کمیٹی کے دیگر بہادر اراکین میرا فخر ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ ایسے وقت میں جب ایم کیوایم اورالطاف حسین کا نام لینا جرم بنادیاگیا تھا اس وقت پروفیسر حسن ظفرعارف اوررابطہ کمیٹی کے دیگر اراکین نے نتائج کی پرواہ کیے بغیرحق پرستی کا ساتھ دیا اورتمام ترمصائب ومشکلات کا سامنا کرنے کے باوجود اپنے الطاف بھائی سے وفانبھائی۔ انہوں نے کہاکہ 71 دانشور، فلاسفر، مصنف اور جامعہ کراچی کے ریٹائرڈ استاد ،پروفیسرحسن ظفرعارف نے اپنی ضعیف العمری اورعلالت کے باوجود ہمت وجرات کا مظاہرہ کیا ، باطل پرستوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کرسچائی کااظہار کیااورناکردہ گناہ کی پاداش میں تقریباً سات ماہ قیدوبند کی صعوبتیں برداشت کرنے کے باوجودآج بھی اپنے اصولی مؤقف پرقائم ہیں جس پر میں انہیں دل کی گہرائیوں سے زبردست خراج تحسین پیش کرتاہوں۔ جناب الطاف حسین نے ڈاکٹر حسن ظفرعارف کی ضمانت پر رہائی کیلئے دن رات خدمات انجام دینے پر عارضی رابطہ کمیٹی کی اراکین، لیگل ایڈ کمیٹی کے وکلاء اور شعبہ خواتین کی اراکین کو بھی زبردست خراج تحسین پیش کیا اور ان کی درازی عمر اور صحت وعافیت کیلئے نیک خواہشات کااظہارکیا۔جناب الطاف حسین نے ڈاکٹرحسن ظفرعارف کی اہلیہ اوردیگر اہل خانہ کو بھی پروفیسر صاحب کی رہائی پر دلی مبارکباد پیش کی ۔